کشمیر کے اول نمبر آنے والے ای اے ایس ڈاکٹر شاہ فیصل کا کپواڑہ میں عظیم الشان جلسہ ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے شمولیت اختیار کی

کپواڑہ /04فروری
پیرزادہ الرشید

سرحدی ضلع کپواڑہ میں اول نمبر پر آنے والے ای اے ایس ڈاکٹر شاہ فیصل نے اپنی سیاسی دور کا آغاز کرتے ہوئے ایک عظیم الشان جلسہ منعقد کیا تفصیلات کے مطابق ٹی آر سی کپواڑہ میں ڈاکٹر شاہ فیصل نے اپنے سیاسی دور کا آغاز کرتے ہوئے ایک عظیم الشان جلسہ منعقد کیا جہاں پر کپواڑہ کے اطراف و اکناف سے آے ہوے ہزاروں کی تعدادمیں لوگوں نے جلسہ گاہ میں آکر ڈاکٹر شاہ فیصل کا والہانہ استقبال کیا اس دوران ڈاکٹر موصوف نے عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ انہوں نے عوامی مسائل کو اُجاگر کرنے کیلئے سیاست کے میدان میں قدم رکھا ہے چونکہ عوام کے ساتھ ہورہی زیادتیوں کا اژالہ کرنے کیلئے انکا ای اے ایس آفیسر بن کر رہنا ہی کافی نہیں ہے بلکہ میدان میں آکر بطور عوامی نمائندہ کی حثیت سے عوامی مسائل کا اژالہ کرنے کی اشد ضرورت ہے اس دوران انہوں نے بتایا کہ اپنی افیسری کے دوران انہوں نے بغور مشاہدہ کیا کہ عوام کے ساتھ ہر سطح پر زیاتی اور نا انصافیوں کو ختم کرنے میں مثبت کردار ادا کرنے کی بےحد ضروت ہے اس دوران انہوں نےبتایا کہ غریب عوام کے ساتھ ہر محاز پر چاہے بے روزگاری کا مسلہ ہو یا روز مرہ کے مسائل ہو ہر لحاظ سے نا انصافی ہورہی ہے اور ان معاملات میں عوام کو انصاف دلانے کیلئے ہر وقت محنت اور لگن سے کام کرنے میں کوئی کسر باقی نہیں رکھیں گے اپنی تقریر کے دوران انہوں نےبتایا کہ ریاست میں رشوت اور اثر رسوخ کی وبا جو عام ہوگی ہے کو اولین بنیادوں پر ختم کیا جائے گا اور وادی کے عوام کو صاف وشفاف انتظامیہ فراہم کرنا انکی فرض منسبی میں شامل ہوگا اس دوران انہوں نے عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ آفیسر ہونے کی وجہ سے انکے ساتھ عام لوگوں کی وابستگی کم رہتی تھی کیونکہ بڑے عہدوں پرفائز آفیسران کے پاس عام لوگ اپنے مسائل بتانے سے خوف محسوس کرتے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ انہوں نے اپنے عہدے کو خیر باد کر کے بحیثت عام شہری گھر گھر گلی گلی جاکر عوام کے مسائل اور مشکلات کی جانکاری حاصل کرنے کیلئے اور عوامی مشاورت کی بنا پر حل کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔اس دوران انہوں نے عوامی امنگوں کو اولین ترجیح دیتے ہوئے بتایا کہ زیادہ سے زیادہ لوگ انکو تعاون فراہم کریں جس سے عوام کو صاف وشفاف انتظامیہ فراہم کرنے میں کو کسر فرد گداشت نہ رہ سکے

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here